Profile عکس

Fahmida Riaz

Fahmida Riaz is one of Pakistan's most renowned Urdu poets, acclaimed for her feminist, progressive poetry. Currently based in Karachi, Fahmida Riaz was born on July 28, 1948 in Meerut, India, and published her first poem at the age of fifteen. Over the last fifty years, Fahmida has produced a phenomenal range of knowledge including poetry, prose, translations and children's books. Her thought is as lyrical as it is resolute, as contemplative as it is political. She was persecuted for her outspoken writing and activism during Zia's military dictatorship, and had to live in exile for many years. Amongst her many works is the poetry collection Badan Darida (The Body Torn), the novella Godavari, and the first translation of Rumi's Masnavi from Farsi to Urdu. She has also translated the works of the towering Sindhi poets Shah Abdul Latif Bhitai and Shaikh Ayaz.

فہمیدہ ریاض

فہمیدہ ریاض پاکستان کی ان سب سے زیادہ نامور شاعرائوں میں سے ایک ہیں جو اپنی شاعری میں تحریک ازادیء نسواں اور ترقی پسند خیالات کی وجہ سے قابل تکریم ٹھہرائي جاتی ہیں۔ آجکل کراچی میں بسنے والی فہمیدہ ریاض اٹھائیس جولائي انیس سو اڑتالیس کو میرٹھ بھارت میں پیدا ہوئی تھیں جنکی پہلی نظم پندرہ سال کی عمر میں شایع ہوئی ۔ فہیمیدہ ریاض نے اعلی ادب تخلیق کیا ہے، جن میں شاعری، نثر ،تراجم،اور بچوں کا ادب شامل ہے۔ انکی تحریریں جتنی مترنم ہوتی ہیں اتنی ہی پڑہنے والے کو تناور و موثر لگتی ہیں ۔ جتنا انکی تخلیقات میں سوچ کا عمل ہے اتنا ہی انکی شاعری سیاسی سوچ سے پر ہے۔ اپنی جرئتمندانہ تحریروں اور ترقی پسنادانہ سیاسی اور ادبی سرگرمیوں کی وجہ سے ماضی میں ضیاء الجق کے دور آمریت میں وہ جبر کا شکار ہوئیں جسکی وجہ سے کئی برس انہیں جلاوطنی میں گذارنا پڑے۔ انکی کئی تصنیفات میں شاعری کا مجموعہ بدن دریدہ، ناویلا گوداواری ،اور رومی کے کلام کا فارسی سے پہلا اردو ترجمہ شامل ہیں۔ جبکہ انہوں نے سندھی زبان کے اعلی پایے کے شعرا شاہ عبدالطیف بھٹائي اور شیخ ایاز کی شاعری کے بھی تراجم کیے ہیں۔

ENTRIES اندراج